Search This Blog

Loading...

السلام علیکم ورحمة الله وبرکاته ډېرخوشحال شوم چی تاسی هډاوال ويب ګورۍ الله دی اجرونه درکړي هډاوال ويب پیغام لسانی اوژبنيز او قومي تعصب د بربادۍ لاره ده


اَلسَّلَامُ عَلَيْكُمْ وَرَحْمَةُ اللهِ وَبَرَكَا تُهُ




اللهم لك الحمد حتى ترضى و لك الحمد إذا رضيت و لك الحمد بعد الرضى



لاندې لینک مو زموږ دفیسبوک پاڼې ته رسولی شي

هډه وال وېب

https://www.facebook.com/hadawal.org


د عربی ژبی زده کړه arabic language learning

https://www.facebook.com/arabic.anguage.learning
There was an error in this gadget

Thursday, December 30, 2010

لالچی چیونٹی

لالچی چیونٹی

چیونٹی
ایک دفعہ کا ذکر ہے ایک چیونٹی جو کے دانے جمع کرنے کے لیے ایک رستے سے گذر رہی تهی کہ اچانک اس کی نظر شہد کے ایک چهتے پر پڑی- شہد کی خوشبو سے اس کے منہ میں پانی بهر آیا- چهتّا ایک پتهر کے اوپر لگا تها- چیونٹی نے ہر چند کوشش کی کہ وه پتهر کی دیوار سے اوپر چڑه کر چهتے تک رسائی حاصل کرے مگر ناکام رہی کیوں کہ اس کے پاؤں پهسل پهسل جاتے تهے اور وه گر گر پڑتی تهی-
شہد کے لالچ نے اسے آواز لگانے پر مجبور کر دیا اور وه فریاد کرنے لگی: " اے لوگو، مجهے شہد کی طلب ہے- اگر کوئی جواں مرد مجهے  شہد کے چهتے تک پهنچا دے تو میں اسے معاوضہ طور پر ایک جو پیش کروں گی -"
پر دار چیونٹی ہوا میں اڑ رہی تهی- اس نے چیونٹی کی آواز سنی اور اسے تنبیہ کرنے لگی: " دیکهو، ایسا نہ ہو کہ چهتے کی طرف چل دو- اس میں بڑا خطره ہے-"

چیونٹی
چیونٹی بولی، " فکر نہ کرو، مجهے پتا ہے کہ مجهے کیا کرنا ہے."
پر دار بولی: " وہاں شہد کی مکهیاں ہیں جن کے ڈنک ہیں۔
چیونٹی بولی: " میں شہد کی مکهیوں سے نہیں ڈرتی، نجهے شہد چاہیئے."
پر دار بولی : " شہد چپکاؤ ہے. تمہارے ھاتھ پاؤں اس میں الجه جائیں گے."
چیونٹی بولی: اگر یونہی ہاته پاؤں چپک جایا کرتے تو کوئی شہد نہ دکها پاتا."
پر دار بولی: " تم بہتر جانتی ہو. لیکن آؤ، میری بات سنو اور شہد کا خیال چهوڑو- میں پر دار ہوں، سالخورده ہوں، اور تجربہ رکهتی ہوں- چهتے کی طرف جانا تمهیں بہت مہنگا پڑے گا اور ممکن ہے تم کسی مصیبت میں گرفتار ہو جاؤ."
چیونٹی بولی: " اگر ممکن ہو تو اپنی مزدوری لو اور مجهے وہاں تک پہنچا دو. اگر تم ایسا کرنے سے قاصر ہو تو زیاده جوش نہ کهاؤ. مجهے کسی سرپرست کی ضرورت نہیں  اور جو نصیحت کرتا ہے مجهے ایک آنکه نہیں بهاتا."
پر دار بولی: " ممکن ہے کوئی ایسا نکل آئے جو تمهیں وہاں تک پہنچا دے لیکن اس میں کوئی بهلائی نظر نہیں آتی اور جس کام کا انجام اچها نہ ہو، میں اس میں معاونت نہیں کرتی."
چیونٹی بولی: " خوا مخواه خود کو خستہ نہ کرو. میں تو آج ہر قیمت پر چهتے تک پہنچوں گی."

چیونٹی
پر دار نے اپنی راه لی اور چیونٹی نے دوباره آواز لگائی : کوئی ہے  جواں مرد کہ مجهے شہد کے چهتے تک پہنچادے اور معاوضے میں ایک جَو مجه سے وصول کر لے؟"
اچانک ایک مکهی کا وہاں سے گذر ہوا۔ اس نے کہا " بے چاری چیونٹی! تمهیں شہد کی طلب ہے اور تمہیں اس کا حق ہے۔ میں تمہاری آرزو برلاتی ہوں۔"
چیونٹی بولی : " الله برکت دے، خدا تمهاری عمر دراز کرے۔ تمهیں کہتے ہیں خیر خواه جانور۔ " مکهی ے چیونٹی کو زمین سے اٹهایا اور اسے چهتے کے قریب بٹها کر خود اڑ گئی۔
چیونٹی حد درجہ مسرور تهی۔ کہنے لگی : " واه وا کیسی سعادت ہے کیسا چهتا ہے، کیسی اچهی بو ہے، کیسا عمده شہد ہے کیا مزه ہے اس میں۔ اس سے بڑه کر اور کیا خوش قسمتی ہو سکتی ہے۔ چیونٹیاں کس قدر بد قسمت ہیں کہ گندم اور جو جمع کرتی رہتی ہیں اور کس وقت بهی ان کا رخ شہد کے چهتے کی جانب نہیں ہوتا۔
چیونٹی نے ادهر ادهر سے کچه شہد چاٹا اور آگے بڑهتی گئی حتی کہ شہد کے حوض میں جا پہنچی اور اچانک اسے محسوس ہوا کہ اس کے هاته پاؤں شہد سے چپک گئے ہیں اور اس کے لئے اپنی جگہ سے حرکت کرنا ممکن نہیں رها:
جب چیونٹی کو پڑا شہد سے کام اے وائے
حوض میں شہد کے، پاؤں ہوئے لت پت اس کے
پڑگیا سست تڑپنے سے جو اس کا پیوند
دست و پا کارنے سے سخت ہوا اور بهی بند
اس نے اپنی نجات کے لئے جس قدر کوشش کی، بے نتیجہ رہی۔ تب اس نے فریاد کی : " عجب طرح پکڑی گئی ہوں۔ اس سے بڑه کر اور کیا بدبختی ہوگی، اے لوگو! مجهے نجات دلاؤ۔ کوئی جو اں مرد جو مجهے دلاؤ۔ ہے کوئی جواں مرد مجهے اس چهتے سے باہر نکال لائے اور میں اسے دو جو انعام میں پیش کروں؟ "
پیش کش پہلے تهی اک جو کی سو اب دو کی ہے
اس جہنم سے نکلنے کی یہی سوجهی ہے!
عین اس وقت پر دار چیونٹی اپنے سفر سے واپس آرہی تهی۔ اسے اس حال میں دیکه کر پر دار کو بڑا دکه ہوا اور اس نے فوراً اس کو مصیبت سے نکالا۔ پهر بولی:" میں تمہیں سرزنش نہیں کرنا چاہتی لیکین اتنی بات ضرور کہوں گی کہ زیاده لالچ گرفتاری کا سبب بن جاتا ہے۔ آج تو تمہارا نصبہ بلندی پر تها کہ میں اچانک یہاں پہنچ گئی لیکن آینده محتاط رہنا۔ گرفتاری سے پہلے نصیحت کو غور سے سن لینا اور کسی مکهی سے مدد نہ مانگنا۔ مکهی چیونٹی کی ہمدرد نہیں اور اس کے لیے چیونٹی کا خیرخواه ہونا ممکن بهی کہاں ہے؟ "
                                                                                                                                                            ختم شد
منبع: tebyan.net

No comments:

Post a Comment

السلام علیکم ورحمة الله وبرکاته

ښه انسان د ښو اعمالو په وجه پېژندلې شې کنه ښې خبرې خو بد خلک هم کوې


لوستونکودفائدې لپاره تاسوهم خپل ملګروسره معلومات نظراو تجربه شریک کړئ


خپل نوم ، ايمل ادرس ، عنوان ، د اوسيدو ځای او خپله پوښتنه وليکئ


طریقه د کمنټ
Name
URL

لیکل لازمی نه دې اختیارې دې فقط خپل نوم وا لیکا URL


اویا
Anonymous
کلیک کړې
سائیٹ پر آنے والے معزز مہمانوں کو خوش آمدید.



بحث عن:

البرامج التالية لتصفح أفضل

This Programs for better View

لوستونکودفائدې لپاره تاسوهم خپل معلومات نظراو تجربه شریک کړئ

MrAbohisham's Channel

هډه وال کے ایس ایم ایس اپنے موبائل میں حاصل کرنے کے لئے اپنا نمبر لکھ کرسائن اپ کردیں پھر آپ کے نمبر میں ایک کوڈ آے وہ یہاں لکھ لیں




که غواړۍ چی ستاسو مقالي، شعرونه او پيغامونه په هډاوال ويب کې د پښتو ژبی مينه والوته وړاندی شي نو د بريښنا ليک له لياري ېي مونږ ته راواستوۍ
اوس تاسوعربی: پشتو :اردو:مضمون او لیکنی راستولئی شی

زمونږ د بريښناليک پته په ﻻندی ډول ده:ـ

hadawal.org@gmail.com

Contact Form

Name

Email *

Message *

د هډه وال وېب , میلمانه

Online User